تحقیقات میں یہ ثابت ہوا ہے کہ موجودہ پشتو زبان درحقیقت جنوں کی زبان تھی جو حضرت سلیمانؑ نے ۔۔۔“ نجی یونیورسٹی کے پروفیسر نے ایسا دعویٰ کردیا کہ یقین کرنا مشکل ہو جائے گا – Tareekhi Waqiat Official Urdu Website
You are here
Home > پا کستا ن > تحقیقات میں یہ ثابت ہوا ہے کہ موجودہ پشتو زبان درحقیقت جنوں کی زبان تھی جو حضرت سلیمانؑ نے ۔۔۔“ نجی یونیورسٹی کے پروفیسر نے ایسا دعویٰ کردیا کہ یقین کرنا مشکل ہو جائے گا

تحقیقات میں یہ ثابت ہوا ہے کہ موجودہ پشتو زبان درحقیقت جنوں کی زبان تھی جو حضرت سلیمانؑ نے ۔۔۔“ نجی یونیورسٹی کے پروفیسر نے ایسا دعویٰ کردیا کہ یقین کرنا مشکل ہو جائے گا

پشاور (ویب ڈیسک) مسلمان ہونے کی حیثیت سے جنات کے وجود پر ہم سب کا یقین ہے لیکن جنات کے حوالے سے محدود علم رکھنے کی وجہ سے ہم بہت سی باتوں کو نہیں جانتے تاہم اب ایک پروفیسر نے حیران کن دعویٰ کردیا ہے ۔ان کا کہنا ہے کہ پشتو زبان جنات کی بولی ہے ۔

ویب سائٹ ”پڑھ لو“کے مطابق یونی ورسٹی آف پشاور کے پروفیسرجاوید خلیل نے بتا یا ہے کہ پشتو زبان کے آغاز کے بارے میں گزشتہ سو سالوں سے بحث چل رہی ہے مگر اب تک اس کے منبع کے بارے میں تفصیلات معلوم نہیں ہو سکی ہیں کچھ مورخ پشتون کو قدیم گروہ آریہ سے متعلق قرار دیتے ہیں جب کہ کچھ لوگ پشتونوں کا تعلق یہودیوں کے قدیم قبائل سے جوڑتے ہیں۔ ڈاکٹر خلیل نے یہودی قبائل والے نظریے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پختون لوگوں کی بنیاد سراسر اسلامی نظریات پر قائم ہے مگر اب پشتو زبان کے بارے میں کچھ ایسے انکشافات سامنے آئے ہیں جنہوں نے سب لوگوں کو حیرت میں مبتلا کر دیا ہے۔انہوں نے بتا یا کہ تحقیق کے مطابق حضرت داودؑکے بیٹے حضرت سلمانؑ کو ان کے والد کی جانب سے کی کمالات وراثت میں ملے تھے جن میں ہوا پر حکمرانی ،پلک چھپکنے میں دور کے فاصلے صے کر لینا اورجانوروں ،پرندوں حشرات اور جنوں کے بولیاں سمجھنے کا علم بھی تھا۔ اللہ تعالی نے حضرت سلمانؑ کو افغان نامی بیٹے سے نوازہ اور افغان نے اپنے باپ سے اس خواہش کا اظہار کیا کہ اس کو جنات کی زبان کا علم سکھا دیا جائے جس پر حضرت سلمانؑ نے اپنے بیٹے کو جنوں کی زبان سکھا دی جس کے بارے میں تحقیقات میں سے یہ ثابت ہوا ہے کہ موجودہ پشتو زبان ہی درحقیقت جنوں کی زبان تھی جو حضرت سلمانؑ نے اپنے بیٹے کو سکھائی تھی۔


Top