پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ والے اتنے بیوقوف نہیں کہ پی ٹی آئی کے لیے میدان کھلا چھوڑ دیں ، اب کیا ہونیوالا ہے ؟ موجودہ سیاسی حالات پر حسن نثار کا خصوصی تبصرہ ملاحظہ کریں – Tareekhi Waqiat Official Urdu Website
You are here
Home > پا کستا ن > پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ والے اتنے بیوقوف نہیں کہ پی ٹی آئی کے لیے میدان کھلا چھوڑ دیں ، اب کیا ہونیوالا ہے ؟ موجودہ سیاسی حالات پر حسن نثار کا خصوصی تبصرہ ملاحظہ کریں

پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ والے اتنے بیوقوف نہیں کہ پی ٹی آئی کے لیے میدان کھلا چھوڑ دیں ، اب کیا ہونیوالا ہے ؟ موجودہ سیاسی حالات پر حسن نثار کا خصوصی تبصرہ ملاحظہ کریں

کراچی(ویب ڈیسک)سینئر تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی نے مشکلات سے نکلنے کیلئے پاناما فیصلے پر یوٹرن لیا ہے۔ (ن) لیگ پی پی کی بیک چینل ڈپلومیسی بھی چل رہی ہے جس پارٹی کا سمجھوتہ ہوگیا وہ دوسری پارٹی کو چھوڑ دے گی، سانحہ ساہیوال کیس پہلے دن ہی خراب کر

دیا گیا، لواحقین جیسے مطمئن ہوں اسی طریقے سے تحقیقات ہونی چاہئے۔ مظہر عباس، بابر ستار، محمل سرفراز، ریما عمر، حفیظ اللہ نیازی اور حسن نثار نے ان خیالات کا اظہار جیو نیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“ میں میزبان ابصاء کومل سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ میزبان کے پہلے سوال پیپلز پارٹی کی قیادت نے پاناما کے فیصلے کو ویلکم کیا تھا اب خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ جس پاناما کیس میں سزا دی گئی وہ کیس ہی نہیں ہے۔ پیپلز پارٹی کے یوٹرن کی وجہ کیا ہے؟ حسن نثار نے کہا کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ اتنی بیوقوف نہیں کہ پی ٹی آئی کو کھلا میدان دیں گی، اس وقت مسئلہ پارٹیوں کا نہیں کچھ شخصیات کا ہے۔ حفیظ اللہ نیازی نے کہا کہ پیپلز پارٹی پچھلے پانچ سالو ں میں کئی دفعہ یوٹرن لے چکی ہے، اس وقت مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کی بیک چینل ڈپلومیسی بھی چل رہی ہے اگر ایک پارٹی کا سمجھوتہ ہوگیا تو وہ دوسری پارٹی کو چھوڑ دے گی۔محمل سرفرازکا کہناتھاکہ پیپلز پارٹی نے مشکلات سے نکلنے کیلئے پاناما فیصلے پر یوٹرن لیا ہے۔ (ن) لیگ کی نسبت پیپلز پارٹی اس وقت زیادہ مشکل میں ہے اور انہیں اتحادی کی ضرورت

ہے۔ نواز شریف کو ریلیف دیا جارہا ہے تاکہ جب پیپلز پارٹی پر ہاتھ ڈالا جائے تو وہ ساتھ نہ دیں۔ مظہرعباس نے کہا کہ خورشید شاہ کا پاناما فیصلہ پر موقف تبدیل کرنا مصالحت کی طرف قدم ہے، اس وقت چونکہ ن لیگ اور پیپلز پارٹی دونوں مشکل میں ہیں اس لئے دونوں اطراف کے رہنما اپنے پرانے بیانات سے پیچھے ہٹ رہے ۔ریما عمر نے کہا تھا کہ پیپلزپارٹی کو پاناما فیصلہ پر تنقید کرنی تھی تو اسی وقت کرتی اب اس کا کوئی اثر نہیں ہوگا۔ بابر ستار نے کہا کہ پیپلز پارٹی کا یوٹرن وقت کی ضرورت نظر آرہا ہے، پیپلزپارٹی اصولی موقف وقت پر اختیار کرتی تو موثر ہوتا۔ مشیر تجارت رزاق داؤد نے ڈیسکون کمپنی چھوڑ دی کیا رزاق داؤد کا موقف درست ہے؟ اس پرمظہر عباس کا کہنا تھا کہ رزاق داؤد اگر صرف شیئر ہولڈر بھی ہیں تب بھی ڈیسکون کو ڈیم کا ٹھیکہ دینا مفادات کا تصادم ہے۔ حسن نثار نے کہا کہ کاروباریوں کو حکومت سے دور ہی رہنا چاہئے۔ بابر ستار نے کہاکہ ڈیسکون کو ڈیم کا ٹھیکہ دینے میں مفادات کا واضح تصادم نظر آتا ہے۔


Top